لاس اینجس: دورانِ حمل لاتعداد پیچیدگیوں سے خواتین کا سامنا ہوتا ہے جن میں سے ایک آنول نال کا متاثرہونا بھی ہے۔ اس کے لئے یونیورسٹی آف کیلیفورنیا لاس اینجلس (یوسی ایل اے)  کے ماہرین نے ایک نینوآلہ تیار کیا ہے جو ایک مرض ’ پلیسینٹا ایکریٹا اسپیکٹرم ڈس آرڈر‘ کے علاج میں مفید ثابت ہوسکتا ہے۔آنول نال سے وابستہ یہ کیفیت جان لیوا بھی ہوسکتی ہے۔ اس میں آنول ناول بچہ دانی کی دیواروں میں اتنی گہرائی سے پیوست ہوجاتا ہے کہ وہ بچے کی پیدائش کے بعد بھی جدا نہیں ہوتا۔ اس سے زچگی میں خون زیادہ بہنے لگتا ہے۔ اس موقع پر اگر ماں کا خیال نہ رکھا جائے تو اس سے اس کی موت بھی واقع ہوسکتی ہے۔ لیکن یہ ایک کم یاب کیفیت ہے اور نصف فیصد زچگیوں میں ہی اس کا سامنا ہوتا ہے۔